ہم سے رابطہ کیجیئے    پہلا صفحہ   سائیٹ کا نقشہ   فارسي   انگليسي   العربيه  


منتظرین کےلیےآیہ(جاءَ الْحَقُّ وَ زَهَقَ الْباطِلُ) کی خوشخبری


بعض احادیث کی بنا پر آیہ (جاءَ الْحَقُّ وَ زَهَقَ الْباطِلُ) کی امام مہدی علیہ السلام کے قیام کے ساتھ تفسیر کی گئی ہے۔
 یہ باطل پرحق اورکفرپرایمان کی کامیابی کی خوشخبری ہے کہ جس کا مکمل نمونہ پوری زمین پرحق وعدالت کی حکومت کا ظہورہے۔

 اسلامک سائنسز اینڈ کلچرل ریسرچ سنٹرکےعلمی بورڈ کےرکن حجۃ الاسلام والمسلمین خدا مراد سلیمیان نے اپنی کتاب( حضرت مہدی علیہ السلام کے عالمی انقلاب میں لوگوں کا کردار) میں لکھا ہے کہ اس سے قبل کہا گیا ہےکہ حضرت امام مہدی علیہ السلام کا قیام عدل وانصاف کی حاکمیت کے قیام کے لیےاہل باطل کےمقابلے میں ایک عظیم ترین اورآخری انقلاب ہوگا۔ یہی وجہ ہےکہ ابلیس اوراس کے تمام پیروکارحق کے اس نورکو خاموش کرنےکی کوشش کررہے ہیں۔

امام مہدی علیہ السلام باطل کو مکمل طورپرتباہ کردیں گےتاکہ تمام انسان دینی تعلیمات کی بنا پر آرام وسکون سے زندگی بسرکرسکیں۔ البتہ یہ الہی وعدہ ہےکہ جو حتمی ہے۔

امام مہدی علیہ السلام کے دشمنوں کے بارے میں مندرجہ ذیل موضوعات میں بحث کی جاسکتی ہے:

۱۔ حق اورباطل کی بہت بڑی جنگ

انسان اپنی سماجی زندگی میں ہمیشہ سےحق اورباطل کےدرمیان جنگ کا مشاہدہ کرتا آرہا ہے۔ بعض افراد یہ خیال کرتے ہیں کہ اس جنگ کا اختتام تاریکی اورتباہی پرہوگا لیکن دینی تعلیمات کے مطابق یہ جنگ اسی طرح جاری رہے گی یہاں تک کہ باطل کا نام ونشان تک نہیں رہے گا۔ جب اس جنگ کے اختتام کا اعلان ہوگا تو حق کامیابی سے ہمکنارہوگا اورباطل کی بساط لپیٹ دی جائے گی اور بشریت اپنی تاریخ کے ایک نئےدورمیں داخل ہوجائے گی۔

حضرت امام مہدی علیہ السلام حق اورحزب اللہ کے گروہ کی قیادت کریں گے اوراپنی پوری طاقت کے ساتھ باطل کےمحاذ اورشیطان کے سپاہیوں کے ساتھ نبرد آزما ہوں گے اورالہی حتمی وعدے کے تحقق کے تحت کامیاب ہوں گے اورتاریخ اپنے عالیشان اختتام پرپہنچ جائے گی۔

۲۔ بے شک اس عظیم جنگ میں شیطان اوراس کے پیروکار اکٹھے ہوں گے تاکہ حق کا مقابلہ کرنے کے لیے اپنی آخری کوشش کرسکیں۔ بعض روایات میں امام مہدی علیہ السلام کے بعض دشمنوں کا تعارف کروایا گیا ہے۔
نیوز کوڈ:39673
ماخذ:شبستان
تاریخ:4/22/2017